بنوں نیوز(عمران علی)بجلی چوروں کے خلاف شکنجہ تیار کرلیا گیا،مکمل خبر پڑھنے کیلئے تصویر کلک کریں

بنوں نیوز(عمران علی)بجلی چوروں کے خلاف شکنجہ تیار کرلیا گیا بجلی چوروں اور بجلی نادہنگان کے گرد گھیرا تنگ کرنے کیلئے بڑے پیمانے پر اپریشن شروع کرنے کیلئے تمام تر انتظامات مکمل کر لئے گئے کمشنر بنوں عبدالجبار شاہ کی صدارت میں بجلی چوری کی روک تھام اور بجلی بقایاجات کی وصولی سمیت بجلی کا نظام بہتر بنانے کیلئے منتخب نمائندوں ،سیاسی جماعتوں کے قائدین اور مشران کا گرینڈ جرگہ کمشنر آفس بنوں میں منعقد ہوا جسمیں رکن قومی اسمبلی زاہد اکرم درانی،ایم پی اے ملک شاہ محمد خان،ڈپٹی کمشنر بنوں محمد علی اصغر،ایس ای واپڈا پیسکو نور اللہ خان ،ڈی پی او یاسر آفریدی،ضلع ناظم عرفان اللہ درانی،تحصیل ناظم ڈومیل فدامحمد خان سمیت واپڈا کے حکام،ضلعی انتظامیہ کے آفسران،بلدیاتی نمائندوں اور سیاسی ومذہبی جماعتوں کے قائدین نے شرکت کی جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے کمشنر بنوں عبدالجبار شاہ اور ڈپٹی کمشنر بنوں محمد علی اصغر نے کہا کہ بجلی چوری اور بجلی بقایاجات کی عدم ادائیگی کی وجہ سے بجلی کا نظام روز بروز خراب ہوتا جارہاہے اور ہم افسوس سے کہتے ہیں اس وقت بنوں پاکستان کے بدترین علاقوں میں شمار ہوتا ہے اس وقت ساڑھے آٹھ ارب روپے بنوں میں بجلی کی مد میں صارفین کے ذمے بقایا ہیں اور واپڈا حکام کے مطابق بنوں میں78فیصد بجلی چوری کی جاتی ہے اور چونکہ بجلی چوری پورے ملک کا مسئلہ ہے اسلئے وفاقی اور صوبائی حکومت نے مل کر فیصلہ کیا ہے کہ بجلی چوری روکنے اور بجلی بقایاجات وصولی کیلئے مشترکہ کام کریں گے اس سلسلے میں خصوصی ٹاسک فورس کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جسمیں ضلعی انتظامیہ،پولیس،واپڈا اور تمام ادارے مل کر بجلی چوری کے خلاف اپریشن کریں گے،کمرشل ار انڈسٹریل یونٹ سے مہم کا آغاز کریں گے ار بعد میں گھروں تک یہ سلسلہ بڑھایا جائیگا اور پہلے مرحلے میں بجلی نادہندگان کو نوٹس جاری کیا جائیگا اور اسکے بعد بقایاجات ادا نہ کرنے والوں کے خلاف ریونیو بقایاجات کے طرز پر وصولی کی جائیگی جسمیں انکی گاڑیوں،جائیدادیں ضبط کرنے کے ساتھ ساتھ انکے بینک اکاؤنٹ بھی منجمد کئے جائیں گے اور غیر قانونی ٹرانسفارمر ضبط کرکے نیامی کی جائیگی تاہم سب سے پہلے احتساب کا عمل واپڈا پیسکوسے شروع کیا جائیگا اور جو واپڈا اہلکار پیسے لیکر بجلی چوری میں مدد کرتے ہیں یا عوام کو بجلی چوری کے طریقے بتاتے ہیں ان کے خلاف مقدمات درج کئے جائیں گے ارو واپڈا پیسکو میں موجود کالی بھیڑوں کو معاف نہیں کیا جائیگا اس سلسلے مٰن سپیشل برانچ،یہاں تک کی آئی ایس آئی سمیت تمام حفیہ ایجنسیوں سے درخواست کی ہے کہ وہ ایسے اہلکارں کی نشاندہی کریں جو بجلی چوری کرتے ہیں یا اپنی بجلی ہمسایوں اور دسوتوں کو مفت دیتے ہیں یا فروحت کرتے ہیں اسکے علاوہ عوام کے جو مسائل ہیں جن میں ناجائز بجلی جرمانے،اوور بنگ اور غلط ریڈنگ شامل ہیں ڈی سی آفس میں تمام محکموں کی موجودگی میں حل کئے جائیں گے اور بقایاجات قسطوں میں بھی ادا کئے جاسکتے ہیں جبکہ جو لوگ بجلی میٹر لگوانا چاہتے ہیں انہیں فوری طور ر بجلی میٹر فراہم کریں گے انہوں نے کہا کہ جس طرح کسی دکان سے روز سودا لیا جائے اور پیسے نہ دیئے جائیں تو وہ دکان بند ہوجائیگی اسی طرح واپڈا بھی ایک ادارہ ہے جس سے لوگبجلی تو استعمال کرتے ہیں چوری بھی کرتے ہیں لیکن ادائیگی نہیں کرتے ہیں اور یہ ادارہ تباہی کی جانب گامزن ہے لہذا مذید مفت بجلی استعمال کرنے کا زمانہ اب گزر چکا ہے ارو بجلی چوری یا بقایاجات ادا نہ کرنے والوں کی عدالت بھی ضمانت نہیں دیگی لہذا اسکے سوا کوئی ار چارہ نہیں کہ عوام بجلی چوری ترک کردیں اور بل جمع کرنا شروع کردیں کیونکہ اس میں عوام کا ہی فائدہ ہے اگر بل جمع کریں گے تو بجلی بھی زیادہ ملے گی لیکن اس کیلئے ہم سب کو عہد کرنا ہوگاکہ ہم سب سنجیدہ کوشش کرکے یہ مسئلہ مل جل کرخوش اسلوبی سے حل کریں جرگہ سے ڈسٹرکٹ ممبران ملک حشمت علی خان،ملک عصمت اللہ خان آمندی،پیر خان بادشاہ،ملک شیر بہادر خان ،تحصیل ناظم ڈومیل فدامحمد خان،نائب ناظم نیکدار علی،ملک یوسف خان،حاجی ملک نواب خان،ناظمین ایسوسی ایشن کے صدر ملک خالدریاض خان،ضٰاء الحق منڈان،پی ٹی آئی رہنما اقبال جدون،مرکزی انجمن تاجران کے صدر ملک سلیم الرحمن،چیمبر آف کامرس کے صدر شاہ وزیر خان،ڈسٹرکٹ خطیب مفتی عبدالغنی ایڈوکیٹ،عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے رہنما مولانا عبدالستار شاہ بخاری ودیگر مشرا ن نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ موجودہ خالات کے ذہ دار صرف عوام ہی نہیں واپڈا اہلکار اور آفسران بھی ہیں انہوں نے بجلی چوری کے خاتمے،بقایاجات وصولی اور بجلی کا نظام بہتر بنانے کیلئے تجاویز بھی دیں قبل ازیں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر بنوں یاسر آفریدی نے جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جو لوگ بجلی چوری کرتے ہیں اور اوپر سے سینہ زوری بھی کرتے ہیں وہ ہمارے ملک کی بجلی راتے ہیں اور ملک سے چوری کرنے والوں کو ہم کسی صورت معاف نہیں کریں گے اگر منتخب نمائندے بھی انکی حمایت میں جلسے جلوس کریں گے تو پولیس انکے خلاف بھی ایف آئی درج کریگی اور گرفتارکریں گے ۔ایس ای واپڈا پیسکو نے جرگہ کو بتایا کہ پیسکو60کروڑ روپے کی بجلی خریدتی ے جسمیں 18کروڑ روپے کی بلنگ ہوتی ہے اور32کروڑ روپے کی بجلی کا غلط استعمال ہوتا ہے اور احتساب کا عمل واپڈا سے شروع کردیا ہے اختیارات کے ناجائز استعمال پر ایک ایس ڈی او کو گھر بھیج دیا ہے جبکہ ایک سپرنٹنڈنٹ کو لائن مین بنادیا ہے۔اور زیادہ ریکوری سی این جی پم،پٹرول پمپس اور کرش مشینوں سے ہوتی ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں