بنو ں نیوز(عمران علی)قبائلی اضلاع اور ایف آرز میں پولیس کی ممکنہ تعیناتی نے شدید صورت اختیار کر لیا، احمد زئی قبائل نے حکو مت کیساتھ تعاون سے انکار کر تے ہوئے فیصلہ کیا ہے کہ لیویز اور خاصہ دار فورس کی جگہ پولیس کی تعیناتی کسی صورت نہیں مانتے اس سلسلے میں قاضی فضل قادر شہید پارک میں اح

بنو ں نیوز(عمران علی)قبائلی اضلاع اور ایف آرز میں پولیس کی ممکنہ تعیناتی نے شدید صورت اختیار کر لیا، احمد زئی قبائل نے حکو مت کیساتھ تعاون سے انکار کر تے ہوئے فیصلہ کیا ہے کہ لیویز اور خاصہ دار فورس کی جگہ پولیس کی تعیناتی کسی صورت نہیں مانتے اس سلسلے میں قاضی فضل قادر شہید پارک میں احمد زئی مالکان و خاصہ داروں کا جرگہ منعقدہ ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے ملک شیر اکبر خان چیئرمین کمیٹی و صوبیدار میجر ایف آر بنوں ، صوبیدار حفیظ الرحمن و دیگر کہنا تھا کہ خاصہ داری ہمیں ایک صدی سے بھی پہلے نیکات میں ملی ہے حکومت پولیس تعیناتی کا فیصلہ واپس اور نیکات نظام بحال کریں قیام امن کیلئے سکیورٹی فورسز کیساتھ شانہ بشانہ رہتے ہوئے حساس ترین ڈیوٹی جاری رکھنے کے باوجود خاصہ داری نظام ختم کیا جا رہا ہے جس سے خاندان اور اداروں میں تصادم کا خدشہ ہے دوسری طرف خاصہ داری پورے خاندان کو دی جا تی ہے جس کی تنخوا ہ پورے خاندان پر تقسیم کی جاتی ہے لیکن پولیس کی تعیناتی سے یہ نیکات کا نظام ختم کیا جا رہا ہے پورے خاندان پر ایک نوکری جبکہ ڈیوٹی ساراخاندان دے رہی ہے پھر بھی ہمارے ساتھ نا انصافی ہو رہی ہے ہم پولیس کے خلاف نہیں لیکن اگر حکومت نے نیکات نظام بحالی کا فیصلہ نہیں کیا تو پولیس کیساتھ تعاون میں قبا ئل بے بس ہوں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں