بڑی قربانیوں کے بعد اس خطے میں امن بحال ہوا ہے، ڈی پی او یاسر آفریدی کا کھلی کچہری سے خطاب

بنوں(عمران علی)ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر بنوں یاسر آفریدی نے تھانہ صدر میں منعقدہ کھلی کچہری سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ بڑی قربانیوں کے بعد اس خطے میں امن بحال ہوا ہے اور دوبارہ ہم کسی کو بھی امن وامان خراب کرنے کی اجازت نہیں دیں گے عوام کے تعاون سے دہشت گردی کا خاتمہ ہوا ہے لیکن اب بھی دہشت گردوں کے سہولت کار بعض علاقوں میں موجود ہیں جن کے خلاف گھیرا تنگ کیا گیا ہے دہشت گردی کے بعد منشیات کی لعنت ہمارے نوجوان کیلئے سب سے بڑے خطرہ ہے آئس نشہ ہمارے تعلیمی اداروں میں پڑھنے والے نوجوانوں کو تباہ کرنے کا عالمی منصوبہ ہے پنجاب،سندھ اور اسلام آباد کے تعلیمی اداروں میں آئس نشے کا دھندہ وعروج پر ہے اور آئس نشہ ہیروئن کی دوسری صورت ہے عوام منشیات فروشوں کی نشاندہی کریں اور پولیس کو جرائم پیشہ افراد،ہوائی فائرنگ کرنے والوں اور منشیات فروشوں سے متعلق اطلاع دیں ان سے قانون کے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائیگاکیونکہ آج اگر ہم نے دوسرے کے بچوں کو منشیات کی لعنت سے نہ بچایا تو کل کو یہ آگ ہمارے گھروں تک بھی پہنچ سکتی ہے کھلی کچہری سے ڈسٹرکٹ ممبر سٹی ون ملک حشمت علی خان،سیف اللہ خان ایڈوکیٹ،ناظم شاہ زیب خان،ڈسٹرکٹ ممبر ملک ابرار خان،قاضی الطاف،آل ٹرانسپورٹ یونین جنوبی اضلاع کے صدر ملک مقبول زمان اعوان ودیگر عمائدین نے بھی خطاب کیا ار مسائل کی نشاندہی کرتے ہوئے ان کے حل کیلئے تجاویز پیش کیں ڈی پی او یاسر آفریدی نے کھلی کچہری میں پیش کی جانے والی تجاویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ان تجاویز پر فوری عمل کیا جائیگا اور عملی طور پر ثابت کردیں گے کہ ہم کھلی کچہری نمائش کیلئے نہیں کرتے بلکہ کھلی کچہریوں میں سامنے آنے والے مسائل کے خل اور تجاویز پر عمل کیلئے اقدامات بھی کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ ملک دشمن عناصر مختلف لبادوں میں ملک کے خلاف سازش کرتے ہیں اور پاکستان کے دشمن خود آکر ملک میں دھماکے اور دہشت گردی نہیں کرتے ہیں بلکہ ہمارے لوگوں کو ورغلاکر ار سہولت کار بناکر ملک کے خلاف استعمال کرتے ہیں ہمیں ان ملک دشمن عناصر اور انکے سہولت کاروں کے خلاف ڈٹ کراور متحد ہوکر کھڑا ہونا پڑیگا ہم سب پختون پکے مسلمان ہیں اور اسلام پسند ہیں ہمارے ہاں قابل علماء کرام،مفکر اور مبلغین کی کوئی کمی نہیں کئی باہر سے آکر ہمیں دین سیکھانے کی آڑ میں ملک کے خلاف غاوت کا درس نہ دیں انہوں نے کہا کہ ڈی آرسی کے ذریعے اب ت ہزاروں علاقائی تنازعات کو حل کیا گیا ہے اسی طرح پبلک لیزان کمیٹیوں کو بھی بحال کیا جائیگا انہوں نے کہا کہ تھانے امن کے گہوارے ہیں جہاں مظلوم اپنے فریاد لیکر آتے ہیں تمام پولیس ایس ایچ اوزاور آفسران کو ہدایت کرتا ہوں کہ وہ تھانے میں آنے والے مظلوموں کو انصاف دیں اور مظلوموں کیلئے مارے دفتر کے روازے دن رات کھلے ہیں کیونکہ پولیس عوام کی خاکم نہیں بلکہ خادم ہے اس موقع پر لینڈ انسپکٹر ٹی ایم اے بنوں نذیر اللہ اعوام،ایڈیشنل ایس پی توحید گنڈاور،ایس ایچ او تھانہ صدر رضاء اللہ خان،سیف اللہ خان،ڈی آر سی کے حاجی ملک نصیب نواز خان،پرویز احمد،تحصیل ناظم سہیل خان،حاجی محمد نیاز خان،انچار ج ٹریفک پولیس خنان مروت ،حاجی ملک فیروز خان،منیر خان فاطمہ خیل،سخی زمان اعوان ودیگر بھی موجود تھے۔قبل ازیں تھانہ صدر پہنچنے پر پولیس کے چاک وچوبند دستے نے ڈی پی او بنوں کو سلامی دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں