دن دیہاڑے بنوں میں ڈکیتی کی بڑھتی ہوئی وارداتیں،بنوں کراچی بنتا جارہا ہے تاجروں کی احتجاجی تحریک کی دھمکی

دن دیہاڑے بنوں میں ڈکیتی کی بڑھتی ہوئی وارداتیں،بنوں کراچی بنتا جارہا ہے تاجروں کی احتجاجی تحریک کی دھمکی بنوں شہر کے مصروف ترین کاروباری مرکز پریٹی گیٹ میں نامعلوم ڈاکوؤں نے 5 لاکھ روپے مالیت سے زائد موبائل سیٹس سے بھری بیگ چھین کر لے گئے تاجروں کا شٹرڈاؤن ہڑتال، ہیڈ کوارٹر سرکل میں یکے بعد دیگرے ڈاکیتی کی وارداتیں بنوں پولیس کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے پانچ دن کے اندر ڈاکیتی کی وارداتوں میں ملوث گروہ اور مال مسروقہ برآمد نہ ہوا تو تاجر اپنی حفاظت کیلئے ازخود اسلحہ اُٹھانے پر مجبور ہوکر سول نافرمانی تحریک شروع کریں گے ہفتہ کے روز اعلیٰ الصبح مدینہ پلازہ میں موبائل کا کاروبار کرنے والے فرید اللہ ولد میر سرور ساکن نواز آباد میریان لاہور پنجاب سے موبائل سیٹس لیکر بنوں پہنچا جب وہ دُکان واقع مدینہ پلازہ پہنچا تو یہاں پر مسلح نقاب پوش تین نامعلوم ملزمان نے موجود چوکیدار پر اسلحہ تان کر موبائل سیٹس سے بھرابیگ اور جیب میں پڑا زیراستعمال قیمتی موبائل چھین کرلے گئے اس واقعہ کی اطلاع ملتے ہی آل موبائل ڈیلرز ایسوسی ایشن کے عہدیداروں کی قیادت میں شٹرڈاؤن ہڑتال کرکے پریس کلب بنوں کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ضلعی انتظامیہ اور پولیس کے خلاف شدید نعرہ بازی کی احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے ملک سلیم الرحمان، شاہ وزیر خان، نیک جہان شاہ، راقیباز خان اور پیر سورانی اور دیگر نے کہا کہ افسوس کا مقام ہے کہ بنوں ہیڈ کوارٹر سرکل میں ایک ماہ میں ایک درجن سے زائد تاجروں کو لوٹا گیا اور اس طرح بہت سے لوگوں سے موٹر سائیکل چور ی ہو گئے ہیں لیکن بد قسمتی سے ان تمام واقعات میں ابھی تک پولیس ملزمان کو پکڑنے میں ناکامی کا سامنا ہے یہ تمام واقعے بنوں شہر میں ہوئے پولیس امن و امان برقرار رکھنے اور تاجروں کوتحفظ دینے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہیں تاجر باقاعدہ حکومت کو ٹیکسز ادا کرتی ہے اگر حکومت ہمیں تحفظ نہیں دے سکتی تو ہم ازخود ریاست کی ذمہ داری نبھاتے ہوئے اسلحہ اُٹھانے پر مجبور ہوجائیں گے انہوں نے کہا کہ اگر پانچ دن کے اندر اندر وارداتوں میں ملوث ملزمان گرفتار نہ ہوئے تو تاجر اپنی تحفظ کے لئے ہتھیا ر اٹھانے پر مجبور ہو جائے گی اور سول نافرمانی کی تحریک شروع کرینگے اور حکومت کے تمام ٹیکسوں سے ادائیگی سے بائیکاٹ کا اعلان کیا جائے