مولانا فضل الرحمن 8 مارچ سے پلان سی کا آغاز بنوں جلسہ سے کریں گے،مولانا عطاء الحق،ایم این اے زاہد اکرم درانی

بنوں نیوز(عمران علی)جے یو آئی پاکستان نے آزادی ملین مارچ پلان سی کا اعلان کردیا پلان سی کا آغاز 8مارچ کو ضلع بنوں سپورٹس کمپلیکس میں تحفظ آئین کانفرنس جنوبی اضلاع کے مشترکہ جلسے سے کیا جائیگا جس سے قائد جمیعت مولانا فضل الرحمن،صوبائی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اکرم خان درانی اور دیگر مرکزی وصوبائی قائدین خطاب کریں گے س سلسلے میں انتظامات کو ختمی شکل دینے کیلئے بنوں کے نیو سبزی منڈی میں اجلاس منعقد ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے جے یو آئی خیبر پختونخوا کے صوبائی جنرل سیکرٹری مولانا عطاء الحق درویش،صوبائی سینئر نائب امیر مولانا ہدایت اللہ شاہ،رکن قومی اسمبلی زاہد اکرم درانی،صوبائی ناظم نشرواشاعت مولانا عبدالجلیل جان،ضلعی امیر قاری محمد عبدللہ،جنرل سیکرٹری حاجی محمد نیاز خان،ضلعی سیکرٹری اطلاعات مولانا اعزاز اللہ حقانی،مولانا احمد علی،سابق ایم پی اے قاری گل عظیم،سابق ایم پی اے مولانا عبدالرزاق مجددی،سابق تحصیل ناظم انجینئر ملک احسان اللہ خان،مولانا عبدالہادی،مفتی عظمت اللہ ودیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 8مارچ کا تحفظ آئین کانفرنس ملک پر مسلط کردہ جعلی حکمرانوں کے ایوانوں کو ہلاکر رکھ دیگا اور اس کانفرنس کے بعد حکمرانوں کی الٹی گنتی شروع ہوجائیگی بنوں کے عوام نے ہمیشہ علماء کرام کا ساتھ دیا ہے اور اس وقت علماء کرام کی نمائندہ جماعت جمیعت علماء اسلام ہی ہے انہوں نے کہا کہ یہ وقت اسلام مخالف قوتوں سے مقابلے کا ہے اور قائد جمیعت مولانا فضل الرحمن نے غیر ملکی ایجنڈے کی تکمیل کیلئے ملک پرمسلط ہونے والے قافدیانیوں اور یہودیوں کے ایجنٹوں کو ملک سے بھگانے کیلئے اسلام آباد میں ملین مارچ سے جس تحریک کا آغاز کیا تھا وہ تحریک کامیابی سے ہمکنار ہوگی اور پلان ا اے اور بی کے بعد اب پلان سی حکمرانوں کی نیندیں حرام کردیگا انہوں نے کارکنوں پر زور دیا کہ وہ8مارچ کو سپورٹس کمپلیکس بنوں میں جنوبی اضلاع کی سطح پر منعقد ہونے والے تحفظ آئین کانفرنس کو کامیاب بنانے کیلئے اپنا قومی فریضہ ادا کریں انہوں نے کہا کہ حج فارم میں ختم نبوت حلف نامے کی بحالی بھی اسمبلیوں میں علماء کرام کی وجہ سے ممکن ہوئی اور مذید بھی جے یو آئی کے ممبران اسمبلی اسلام مخالف اقدامات کے خلاف ڈھال بن کر اسلامی قوانین اور اسلامی بلوں کا دفاع کریں گے انہوں نے کہا کہ اگر یہ غیر ملکی ایجنٹ مذید اقتدار میں رہے تو پگڑی والوں ،داڑھی والوں اور دینی مدارس کو ان سے خطرہ ہے 8مارچ کو جلسہ ایک چیلنج ہے اور اسے ہر صورت کامیاب بناکر ہی دم لیں گے مقررین نے کہا کہ سلیکٹڈ اور جعلی وزیر اعظم عمران خان نے انتخابات کے دنوں میں عوام وک ایک کروڑ نوکریاں دینے،50لاکھ گھر بنانے اور غریب وبیروزگاری ختم کرنے کے خواب دکھائے تھے لیکن آج ڈیڈھ سال بعد بھی نہ تو ملک میں خوشخالی آئی،نہ غربت اور بیروزگار کا خاتمہ ہوا اور نہ ہی کپتان کے وعدے ایفا ہوئے بلکہ عوام کو مہنگائی کی چکی میں پسا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ خوشخالی صرف اور صرف اسلامی نظام کے ذریعے آئیگی اور کلمے کے نام پر حاصل کئے گئے ملک میں صرف علماء کرام ہی اسلامی نظام لاسکتے ہیں انہوں نے کہا کہ عالم کفر اس ملک سے دینی مدرسہ اور ملا کو ختم کرنے کی سازش میں مصروف ہے اور اس مقصد کیلئے اپنے ایجنٹوں کو پاکستان کے عوام کو جبراً مسلط کردیا ہے لیکن جب تک ایک بھی عالم دین زندہ ہے اس ملک میں کسی صورت بھی اسلام کے خلاف نظام راءج کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔